+92 3238537640

Share Social Media

Mosquitoes and malaria. In the eyes of Quran and science.

Mosquitoes and malaria. In the eyes of Quran and science.

Mosquitoes and malaria. In the eyes of Quran and science.
Mosquitoes and malaria. In the eyes of Quran and science.

مچھر اور ملیریا۔قران و سائنس کی نظر میں
Mosquitoes and malaria. In the eyes of Quran and science.
حکیم المیوات قاری محمد یونس شاہد میو

قران کریم نے مچھر کی مثال دیکر انسانی فکر کو جھنجوڑنے کی کوشش کی ہے۔کچھ چیزوں کی تخلیق پر غور و فکر کرنے کی قران کریم نے دعوت دی ہے جیسے اونٹ،مچھر وغیرہ مچھر کے بارہ میں کچھ معلومات افزاء باتیں نقل کی جارہی ہیں۔

اگر ہم مچھر کی تخلیق پر مزید غور کریں تو ہمیں اللہ کی لامحدود طاقت کا احساس ہو جائے گا۔ مچھر کی آنکھ کی اناٹومی پر غور کریں۔ مچھر کی آنکھ ایک پیچیدہ ڈھانچہ ہے جو بہت سے مختلف حصوں پر مشتمل ہے جو مل کر کام کرتے ہیں تاکہ مچھر کو اپنے ماحول میں حرکت، روشنی اور دیگر بصری محرکات کا پتہ لگا سکے۔

مچھر کی آنکھ کے کچھ اہم اجزاء یہ ہیں:

مرکب آنکھ: مچھروں کی دو بڑی مرکب آنکھیں ہوتی ہیں، ان کے سر کے ہر طرف ایک۔ ہر مرکب آنکھ ہزاروں چھوٹے لینز سے بنی ہوتی ہے جسے ommatidia کہا جاتا ہے، جو مچھر کے ماحول کی موزیک امیج بنانے کے لیے مل کر کام کرتے ہیں۔
کارنیا: مچھر کی آنکھ کا سب سے باہر کا حصہ کارنیا ہے، ایک صاف، حفاظتی تہہ جو آنکھ کی سطح کو ڈھانپتی ہے اور آنے والی روشنی پر توجہ مرکوز کرنے میں مدد کرتی ہے۔

لینس:

مچھر کی آنکھ کا لینس کارنیا کے پیچھے واقع ہوتا ہے اور آنے والی روشنی کو ریٹنا پر مرکوز کرنے میں مدد کرتا ہے۔
ریٹنا: ریٹنا روشنی کے حساس خلیوں کی ایک پتلی تہہ ہے جو مچھر کی آنکھ کے پچھلے حصے میں واقع ہوتی ہے۔ جب روشنی ریٹنا سے ٹکراتی ہے، تو یہ کیمیائی رد عمل کا ایک سلسلہ شروع کرتی ہے جو برقی سگنل پیدا کرتی ہے، جو مچھر کے دماغ کو بھیجے جاتے ہیں۔

آپٹک اعصاب: آپٹک اعصاب اعصابی ریشوں کا ایک بنڈل ہے جو ریٹنا کو دماغ سے جوڑتا ہے۔ یہ ریٹنا کے ذریعے پیدا ہونے والے برقی سگنلز کو دماغ تک لے جاتا ہے، جہاں ان پر کارروائی کی جاتی ہے اور بصری معلومات کی تشریح کی جاتی ہے۔
مجموعی طور پر، مچھر کی آنکھ ایک ناقابل یقین حد تک پیچیدہ اور جدید ترین عضو ہے جو مچھر کو اپنے ماحول میں تشریف لے جانے اور زندہ رہنے کی اجازت دیتا ہے۔

اس لیے اس آیت میں مچھر کا استعمال اس خیال کو اجاگر کرتا ہے کہ اللہ کی قدرت اور علم لامحدود اور ہر چیز پر محیط ہے اور یہ کہ مخلوقات میں سے چھوٹی مخلوق بھی اس کی عظمت کی یاد دہانی کا کام کر سکتی ہے۔

جدید میڈیکل سائنس کا شعبہ بیالوجی بتاتا ہے کہ مادہ مچھر ہی کا منہ ایسے آلات سے بنا ہوا ہے کہ جس سے جلد میں سوراخ ہوتا ہے اور مادہ اپنے سٹر اسے خون چوستی ہے:Only female mosquitoes feed on blood۔مادہ مچھر اپنے حساس سینسرز کے ذریعے پینے کی ہو اور جسم کی حرارت کو محسوس کرتی ہے۔ آنکھیں ایسی ہیں کہ اندھیرے میں دیکھ سکتی ہیں ان میں لینز کی تعداد ایک سو ہے۔ 840 اس کے دانت ہیں لہذا یہ دانت پیستی ہوئی اپنے شکار پر جھپٹ پڑتی ہے۔ اس کے پر ایک سیکنڈ میں چھ سو مرتبہ حرکت کرتے ہیں جبکہ حرکت کی بھی مختلف اقسام ہیں لہذا اس خدائی ہیلی کاپٹر کی چھ سمتی حرکتوں کو قابو کرنا مشکل ہوتا ہے۔ معروف عالم اور سائنسدان علامہ راتب نابلسی کہتے ہیں: اس کے تین دل ہیں دو پیٹ ہیں یہ چیزوں کو اس کی حرارت سے دیکھتے ہیں اور اس قدر حساس ہیں کہ ہزار میں سے ایک درجہ حرارت کو بھی محسوس کر لیتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ اے سی والے ٹھنڈے ترین کمرے میں بھی اپنے سوئے ہوئے شکار کو پکڑ لیتے ہیں۔ الغرض ! ان کے اندر ایسا الیکٹرانک سسٹم ہے کہ آج کا جدید ترین لڑاکا جہاز بھی اس کا مقابلہ نہیں کر سکتا۔ ہاتھی میں جتنے اعضاء بڑے ہوتے ہیں مچھر کےاتنے ہی چھوٹے ہوتے ہیں۔

مچھر کا مزاج کیا ہے؟

طبی نکتہ نگاہ سے جب کسی چیز کا مزاض یا ترکیب اجزائی معلوم ہوجائیں تو اس سے ہونے والے فائدہ اور نقصانات کو قابو مین کیا جاسکتا ہے۔مچھروں سے ہونے

والے بکاروں اور ان کے کاٹنے سے ہونے والی تکلیف کو دور کرنے والی دیسی ادویات پر غور کرنے پر معلوم ہوتا ہے کہیہ غذائی اور دوائیں سب کی سب عضلاتی مزاج ہوتے ہیں۔دوسری بات مچھروں کی افزائش اوران کے مساکن ہیں۔یہ سب پانی یا نمی پر مشتمل ہوتے ہیں۔جہاں خشکی ہو۔یا جہاں خوشبو ہو وہاں مچھر نہیں رہتے۔مثلاََ میلریائی بخاروں اور ڈینگی وغیرہ کے غذائی اور دوائی اجزاء خشک مزاج کے حامل ہوتے ہیں۔ اس لئے قیاس کہتا ہے کہ مچھر کا مزاج اعصابی ہوتا ہے اور اس کے کاٹنے سے اعصابیت کا غلبہ ہوجاتا ہے۔مثلا لیموں ۔گئودنتی۔نیم۔لونگ۔پیاز۔لہسن۔سنگترہ کا چھلکا۔وغیرہ۔اسی طرح کونین بھی عضلاتی مزاج کی حامل ہوتی ہے

مچھر کاٹنے کے پیچھے کیا سائنس ہے؟

مچھر پودوں سے نیکٹر پیتے ہیں اور پھولوں کی پولینیشن میں مدد کرتے ہیں، واضح رہے کہ پولینیشن وہ عمل ہے جس میں کیڑے مکوڑوں کے ذریعے پودوں کے بیج

ایک پھول سے دوسرے پھول تک پہنچتے ہیں اور نئے پھول وجود میں آتے ہیں۔
لیکن جب مادہ مچھر کو انڈے پیدا کرنے کا وقت آتا ہے تو انہیں اضافی پروٹین کی ضرورت ہوتی ہے اور یہ پروٹین انہیں انسانوں کے خون سے حاصل ہوتی ہے۔
ڈاکٹر کونور میک مینیمن کہتے ہیں کہ ’جب مچھر کاٹتا ہے تو یہ دراصل خون کی نالی تلاش کرنے کی کوشش کررہا ہوتا ہے اور جب انہیں خون کی نالی مل جاتی ہے تو وہ ریڈ بلڈ سیل اور پلازما کو چوستے ہیں۔
ان کا کہنا ہے کہ جب مچھر کاٹتا ہے تو انسانی جسم کا مدافعتی نظام فوراً کاٹنے والی جگہ پر ہسٹامین بھیج دیتا ہے کیونکہ وہ مچھرکے سلائوا (saliva)کو شناخت نہیں کر پاتا اس کے نتیجے میں شدید خارش شروع ہوجاتی ہے۔

عالمی سطح پر ملیریا کی صورت حال ہے

 

ورلڈ ملیریا رپورٹ 2020 کے مطابق، 2020 میں عالمی سطح پر ملیریا کے 241 ملین کیسز تھے (غیر یقینی کی حد 218–269 ملین) اور ملیریا سے 627000 اموات (غیر یقینی کی حد 583–765 ہزار)۔ ملیریا کے کیسز 2000 میں 81 سے کم ہو کر 2015 میں 59 اور 2019 میں 56 ہو گئے، اس سے پہلے کہ 2020 میں دوبارہ بڑھ کر 59 ہو گئے۔ عالمی سطح پر، ملیریا سے ہونے والی اموات 2000-2019 کے عرصے کے دوران مسلسل کم ہوئیں، 2000 میں 896 000 سے اور 2020 میں 52001 تک 2019 میں 558 000۔ 2020 میں، ملیریا سے ہونے والی اموات میں 2019 کے مقابلے میں 12% کا اضافہ ہوا۔ ملیریا کے کیسوں میں اضافے کا تعلق COVID-19 وبائی امراض کے دوران خدمات میں خلل کے ساتھ ہے۔
ڈبلیو ایچ او افریقی خطے میں ملیریا کا بوجھ سب سے زیادہ تھا، ایک اندازے کے مطابق 95% کیسز اور 96% اموات؛ اس خطے میں ہونے والی تمام اموات میں سے 80% 5 سال سے کم عمر کے بچوں کی ہیں۔

مچھر بیماری نہیں شفاء کا بھی سبب بھی بن سکتے ؟

بی بی سی کے مطابق، دنیا کی سب سے مہلک بیماریوں میں سے ایک کے خلاف ایک امید افزا پیش قدمی کرتے ہوئے، سائنسدانوں نے
اتفاقی طور پر ایک قدرتی طور پر پائے جانے والے بیکٹیریا، TC1 کو دریافت کیا ہے، جو مچھروں سے انسانوں میں ملیریا کی منتقلی میں رکاوٹ بن سکتا ہے۔
یہ اہم نتیجہ اسپین میں ایک تحقیقی مرکز میں سامنے آیا، جس کی نگرانی دوا ساز کمپنی GlaxoSmithKline (GSK) کرتی ہے۔ محققین نے منشیات کی نشوونما سے متعلق مچھروں پر تجربات کرتے ہوئے اس رجحان پر ٹھوکر کھائی۔

ٹیم نے ایک غیر متوقع نتیجہ دیکھا: مچھروں کا ایک گروپ ملیریا کے پرجیویوں سے پاک رہا۔ مزید تجزیے سے قدرتی ماحول میں موجود بیکٹیریا کے تناؤ، TC1 کی نشاندہی ہوئی، جو مچھر کے آنتوں کے اندر ملیریا کے پرجیویوں کی افزائش کو روکتا دکھائی دیتا ہے۔

یہ جراثیم لچکدار ثابت ہوا، مچھر کی عمر بھر برقرار رہتا ہے اور خاص طور پر اس کے پرجیوی بوجھ کو 73 فیصد تک کم کرتا ہے۔ یہ غیرمتوقع مددگار ایک مالیکیول پیدا کرتا ہے جسے Harmane کہا جاتا ہے، جو مچھر کے اندر ملیریا پرجیوی کی ابتدائی نشوونما کے مراحل میں رکاوٹ ہے۔

ملیریا عالمی سطح پر آبادی کو تباہ کر رہا ہے، ہر سال تقریباً 620,000 جانیں لے لیتا ہے، بنیادی طور پر پانچ سال سے کم عمر کے بچوں میں۔ جب کہ ویکسین کی تیاری جاری ہے، افریقہ میں ان کا نفاذ ابتدائی مراحل میں ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Company

Our Dunyakailm website brings you the convenience of instant access to a diverse range of titles, spanning genres from fiction and non-fiction to self-help, business.

Features

You have been successfully Subscribed! Ops! Something went wrong, please try again.

Most Recent Posts

  • All Post
  • (Eid Collection Books ) عید پر کتابیں
  • (Story) کہانیاں
  • /Mewati literatureمیواتی ادب
  • Afsanay ( افسانے )
  • Article آرٹیکلز
  • Biography(شخصیات)
  • Children (بچوں کے لئے)
  • Cooking/Recipes (کھانے)
  • Dictionary/لغات
  • Digest(ڈائجسٹ)
  • Digital Marketing and the Internet
  • Economy (معیشت)
  • English Books
  • Freelancing and Net Earning
  • General Knowledge ( جنرل نالج)
  • Happy Defence Day
  • Health(صحت)
  • Hikmat vedos
  • History( تاریخ )
  • Hobbies (شوق)
  • Homeopathic Books
  • Information Technologies
  • ISLAMIC BOOKS (اسلامی کتابیں)
  • Knowledge Books (نالج)
  • Marriage(شادی)
  • Masters Courses
  • Novel (ناول)
  • Poetry(شاعری)
  • Political(سیاست)
  • Psychology (نفسیات)
  • Science (سائنس)
  • Social (سماجی)
  • Tibbi Article طبی آرٹیکل
  • Tibbi Books طبی کتب
  • Uncategorized
  • War (جنگ)
  • اردو ادب آرٹیکل
  • اردو اسلامی آرٹیکل
  • اردو میں مفت اسلامی کتابیں
  • اقوال زرین
  • دعوت اسلامی کتب
  • ڈاکٹر اسرار احمد کتب
  • روحانیت/عملیات
  • سٹیفن ہاکنگ کی کتب
  • سوانح عمری
  • سیاسی آرٹیکل
  • سید ابو الاعلی مودویؒ کتب خانہ
  • علامہ خالد محمودؒ کی کتابیں
  • عملیات
  • عملیات۔وظائف
  • قاسم علی شاہ
  • قانون مفرد اعضاء
  • کتب حکیم قاری محمد یونس شاہد میو
  • کتب خانہ مولانا محمد موسی روحانی البازی
  • متبہ سید ابو الاعلی مودودیؒ
  • مفتی تقی عثمانی کتب
  • مکتبہ جات۔
  • مکتبہ صوفی عبدالحمید سواتیؒ
  • میرے ذاتی تجربات /نسخہ جات
  • ھومیوپیتھک
  • ویڈیوز
    •   Back
    • Arabic Books (عربی کتابیں)
    • Kutub Fiqh (کتب فقہ)
    • Kutub Hadees (کتب حدیث)
    • Kutub Tafsir (کتب تفسیر)
    • Quran Majeed (قرآن مجید)
    • محمد الیاس عطار قادری کتب۔ رسالے

Category

Our Dunyakailm website brings you the convenience of instant access.

Products

Sitemap

New Releases

Best Sellers

Newsletter

Help

Copyright

Privacy Policy

Mailing List

© 2023 Created by Dunyakailm